spot_img
Wednesday, August 10, 2022
spot_img

-

ہومLatest Newsصدر مملکت نے نیب اور الیکشن ترمیمی بل منظوری کے بغیر واپس...

صدر مملکت نے نیب اور الیکشن ترمیمی بل منظوری کے بغیر واپس بھجوادیے

- Advertisement -
- Advertisement -

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے قومی احتساب بیورو (نیب) اور الیکشن ترمیمی بل بغیر منظوری کے واپس بھجوادیے۔

صدر مملکت نے بل آرٹیکل 75 کی شق ایک بی کے تحت واپس وزیر اعظم کو بھجوائے اور ہدایت کی کہ پارلیمنٹ اور اس کی کمیٹیاں بلوں پر نظر ثانی اورتفصیلی غور کریں۔

صدر مملکت کا کہنا تھاکہ صدر مملکت کو قانون سازی کی تجاویز پر مطلع نہیں کیا گیا، اور مطلع نہ کرکےآرٹیکل 46 کی خلاف ورزی کی گئی۔

صدر کا اعتراض میں کہنا ہے کہ دونوں بل جلد بازی میں 26 مئی کو قومی اسمبلی اور 27 مئی کو سینیٹ سے منظور ہوئے، قانون سازی پر قانونی برادری اور سول سوسائٹی سے مشاورت کی جانی چاہیے، ٹیکنالوجی میں بہتری لا کر بیرون ملک سے پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دیا جاسکتا ہے، عدالت نے فیصلے میں کہا کہ آئی ووٹنگ تھرڈ پارٹیز کی جانب سے محفوظ قراردیاجا چکاہے

صدرمملکت کا کہنا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 17 میں بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دیا گیا ہے ، پاکستان کی ووٹنگ مشین میں پیپر ٹریل کا پورا سسٹم موجود ہے، ووٹنگ مشین بیلٹ پیپر کی چھپائی اور گنتی میں مدد دیتی ہے۔

عارف علوی کا کہنا تھاکہ پاکستان میں ہر الیکشن کے نتائج کو چیلنج کیا جاتا ہے، نئی ترامیم ایک قدم آگے جانے اور گھبرا کر دو قدم واپس پلٹ جانے کے مترادف ہیں، ترامیم الیکشن میں شفافیت کے تکنیکی عمل میں غیر ضروری تاخیر لانے کے مترادف ہیں

نیب قوانین کے حوالے سے صدر مملکت نے اعتراض کیا کہ نیب قوانین میں ترمیم سے بارِ ثبوت استغاثہ پر ڈال کر فوجداری قوانین جیسا بنا دیا گیا ہے، نیب قانون میں ترامیم سے استغاثہ کیلئے کرپشن کے الزامات ثابت کرنا ناممکن بنادیا گیا اور سرکاری اختیارات کے غلط استعمال کے الزامات ثابت کرنا ناممکن بنا دیا گیا ہے

- Advertisement -

Related articles

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں

Stay Connected

6,000مداحپسند
300فالورزفالور
3,061فالورزفالور
400سبسکرائبرزسبسکرائب کریں

Latest posts