spot_img
Friday, September 30, 2022
spot_img

-

ہومLatest Newsباس نے ڈانٹا کیوں؟ خاتون ورکر نے آفس میں 21 کروڑ روپے...

باس نے ڈانٹا کیوں؟ خاتون ورکر نے آفس میں 21 کروڑ روپے سے زائد کا تیل جلا دیا

- Advertisement -
- Advertisement -

ڈیلی میل کی ایک رپورٹ کے مطابق تھائی لینڈ کے ایک تیل کے گودام میں کام کرنے والی 38 سالہ خاتون اپنے باس سے ناراض تھی جس کے باعث خاتون نے انتہائی خوفناک اقدام اٹھاتے ہوئے تیل کے گودام کو آگ لگا دی جس کے نتیجے میں گودام میں موجود کروڑوں روپے مالیت کا تیل جل گیا۔

Why did the boss scold? A female worker burnt oil worth more than Rs 21 crore in her office

رپورٹ کے مطابق تیل کے گودام میں آگ لگنے کا واقعہ 29 نومبر کو اس وقت پیش آیا جب این شریا نامی خاتون نے ایک کاغذ کا ٹکڑا جلا کر پیٹرول کے کنٹینر پر پھینک دیا جس کے نتیجے میں تھائی لینڈ کے صوبے نیکھم پیتھون میں واقع پریپاکارن آئل ویئر ہاؤس میں زبردست آگ بھڑک اٹھی

میڈیا رپورٹس کے مطابق آگ لگنے سے گودام کے مالکان کو 40 ملین تھائی بھات یعنی 9 لاکھ پاؤنڈز (21 کروڑ سے زائد پاکستانی روپے) کا نقصان ہوا۔

بعد ازاں آگ کو فائر ٹینڈرز کی مدد سے بجھاتے ہوئے خاتون کو گرفتار کر لیا گیا جس نے اپنے جرم کا اعتراف بھی کرلیا۔

خاتون نے پولیس کو بتایا کہ وہ اپنے باس کی ڈانٹ ڈپٹ سے ناراض تھی، باس کی جانب سے خاتون کو کام بہتر بنانے کے ہدایات کی جاتی تھیں جس سے تنگ آکر خاتون نے گودام کو آگ لگا دی.

- Advertisement -

Related articles

Stay Connected

6,000مداحپسند
300فالورزفالور
3,061فالورزفالور
400سبسکرائبرزسبسکرائب کریں

Latest posts